100 سے زائد بھارتی فلم سازوں نے بھارتی عوام کو مودی کو ووٹ دینے سے روک دیا

ویب ڈیسک: بھارت بھر میں 100 سے زائد فلم سازوں نے  ‘بچاؤ ڈیموکریسی مہم شروع کر دی ہے  اور آئندہ انتخابات کے ذریعے بی جے پی کو اقتدار سے نکالنے کے لیے بھر پور کوشش کی جارہی ہے .
فلم سازوں کی فہرست میں سابقہ ​​دستاویزی فلم آنند پٹروڈن، نیشنل ایوارڈ فاتح وٹری میران شامل ہیں جنہوں نے حال ہی میں دھانش اسٹارر ویڈا چنئی کی ہدایت کی ہے، مقبول ملیالم زبان کے پروڈیوسر / ڈائریکٹر عاشق ابو، تہوار کے ڈائریکٹر بینا پال اور گرویرندر سنگھ جیسے دیگر معروف فلم سازکار ، دیوشش میجی،  پندر سنگھ، سنال کمار ساجدین اور کبیر سنگھ چوہدری بھی شامل ہیں.

بیان یہ کہہ رہا ہے کہہ ثقافتی طور پر جھوٹی اور جغرافیائی طور پر متنوع ڈیمو کریسی ہمیں نہیں چاہیے، ہم ہمیشہ متحد رہیں گے. ایک قوم کے طور پر. یہ واقعی اس حیرت انگیز ملک کے شہری بننے کا بہت اچھا احساس ہے. “

فلم سازوں نے اپنی اہم تشویشوں کی فہرست “کے طور پر دھندلاپن اور نفرت کی سیاست کا خاتمہ؛دلتوں، مسلمانوں اور کسانوں کی حد بندی ثقافتی اور سائنسی اداروں کی مستحکم کشیدگی؛ اور سینسر شپ میں اضافہ، “بی جے پی حکومت کے تحت ہے  .

فلم سازوں نے مزید کہا کے بھارتی لوگوں کو بی جے پی کو ووٹ نہیں دینا چاہیۓ تا کہ بھارت حقیقی سیکولر سٹیٹ بن سکے

سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
loading...

Related Articles