ایم پی اےعابدہ کے شوہرکا ایڈیشنل سیشن جج پرتشدد،چیف جسٹس اطہر من اللہ کا انتظامی نوٹس


اسلام آباد : اسلام آباد ہائی کورٹ کےچیف جسٹس اطہر من اللہ نے ایم پی اےعابدہ کے شوہرکا ایڈیشنل سیشن جج پر تشدد کاانتظامی نوٹس لیتے ہوئے کہا ریاست کی رٹ کمزور ہونے سے ایسے واقعات رونما ہوتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے شاہراہ دستورپر ایم پی اے عابدہ کے شوہر کا ایڈیشنل سیشن جج پر تشدد کے واقعے کا انتظامی نوٹس لے لیا جبکہ معاملے میں ایڈیشنل سیشن جج نے وکیل مقرر کر دیا۔

سیشن جج کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ گاڑی کی کراسنگ کے معاملے پر ایم پی اے کے شوہر آپے سے باہر ہوگئے تھے، واقعےکی سی سی ٹی وی فوٹیج میں حقیقت بھی سامنے آگئی ہے۔

سیشن جج کے وکیل نے کہا کہ دو گاڑیوں میں بیٹھےافراد میں پہلے جانے پر تکرار پھر ہاتھا پائی ہوئی، جھگڑےکےوقت ایم پی اے بھی گاڑی میں موجود تھیں، دوسری گاڑی میں ایڈیشنل سیشن جج ملک جہانگیر موجود تھے، عابدہ راجہ کےشوہر نےایڈیشنل سیشن جج کوتشدد کا نشانہ بنایا، ایڈیشنل جج نے اپنا پستول نکال کرہوائی فائر کئے تاہم فائرنگ سے کوئی جانی نقصان نہیں ہوا، تھانہ سیکریٹریٹ پولیس بھی موقع پر پہنچی۔

چیف جسٹس اطہرمن اللہ نے ریمارکس دیے کہ ریڈزون میں گزشتہ روز دو افراد نے فائرنگ کی، بعد میں دونوں بااثر افراد نے صلح کرلی، بعد میں صلح کرلینا ریاست کو چیلنج کرنے کے مترادف ہے۔

جسٹس اطہرمن اللہ کا کہنا تھا کہ ریاست کی رٹ کمزور ہونے سے ایسے واقعات رونما ہوتے ہیں، ہرچیزعدالت کےکندھوں پر مت ڈالیں، ریاست ذمہ داری پوری کرے۔

fb-share-icon0

Tweet
20

Comments

comments



سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
loading...

Related Articles