ایم کیو ایم کے سابق سیکٹر انچارج کو 5 سال قید، واسع جلیل مفرور قرار


کراچی: عدالت نے منی لانڈرنگ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے ایم کیو ایم کے سابق سیکٹر انچارج رئیس مما کو 5 سال قید اور واسع جلیل کو مفرور قرار دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق منی لانڈرنگ کیس میں کراچی میں عدالت نے مقدمے کا فیصلہ سنادیا، ایم کیو ایم کے سابق سیکٹر انچارج رئیس مما کو 5 سال قید کا حخم دے دیا گیا، عدالت نے ملزم پر پچاس ہزار روپے جرمانہ بھی عائد کیا۔

فیصلے کے مطابق ملزم رئیس مما کے ڈی اے کا ملازم رہ چکا ہے، ملازمت کے دوران منی لانڈرنگ کے لیے اپنی نوکری کا استعمال کیا۔

پولیس کے مطابق ملزم رئیس مما ایم کیو ایم کورنگی کے سیکٹر کا انچارج تھا، ملزم کو ملائیشیا سے گرفتار کیا گیا تھا۔

مزید پڑھیں: رئیس مما سے تحقیقات کیلئے سینئرافسران پرمشتمل جے آئی ٹی تشکیل

وکیل کے مطابق ملزم پر پولیس مقابلہ، قتل، بھتہ خوری ودیگر 18 مقدمات درج ہیں، مقدمے میں ایم کیو ایم لندن کے رہنما واسع جلیل مفرور ہیں۔

واضح رہے کہ دو سال قبل اپریل میں ایم کیو ایم لندن کے ٹارگٹ کلر رئیس مما سے تحقیقات کے لئے رینجرز، سی ٹی ڈی اور اسپیشل برانچ کے افسران پر مشتمل جے آئی ٹی تشکیل دی گئی تھی۔

یاد رہے کہ رئیس مما نے عدالت میں اپنا بیان ریکارڈ کراتے ہوئے یہ اعتراف کیا تھا کہ ایک سیاسی جماعت کی قیادت کے حکم پر ٹارگٹ کلنگ کی، اس کے علاوہ ملزم نے سیکیورٹی اہلکاروں کو بھی قتل کرنے کا اعتراف کیا تھا۔

fb-share-icon0

Tweet
20

Comments

comments



سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
loading...

Related Articles