فلمیں بند ہونے کے بعد نواز الدین صدیقی کھیتی باڑی کرنے پر مجبور –


ممبئی : بالی ووڈ کے نامور اور باصلاحیت اداکار نوازالدین صدیقی نے کرونا کی وجہ سے فلمیں بند ہونے کے بعد کھیتی باڑی شروع کردی۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق 46 سالہ اداکارہ نے 20 سال قبل جس کام سے دوری اختیار کی اور بالی ووڈ کی دنیا میں داخل ہوئے اب سینیما بند ہونے کے بعد وہ واپس اُسی طرف چلے گئے ہیں۔

نوازالدین صدیقی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنی ویڈیو شیئر کی جس میں وہ کھیتوں میں کام کررہے ہیں،  اُن کے کپٹروں سے اندازہ ہورہا ہے کہ انہوں نے  دن بھر مشقت کی۔

اداکار کے کپڑوں پر مٹی اور پسینے کے نشانات واضح ہیں اور وہ نہر کے پاس بیٹھ کر شام کے وقت منہ دھو رہے ہیں۔ یہ ویڈیو شائد نواز الدین صدیقی نے اپنا دن بھر کا کام ختم کرنے کے بعد بنائی ہوگی تاکہ وہ منہ ہاتھ دھو کر گھر کے لیے روانہ ہوں۔

سوشل میڈیا پر ویڈیو شیئر ہونے کے بعد صارفین اور مداحوں نے نوازالدین صدیقی کو کھیتی باڑی کا کام کرتے دیکھ کر حیرانی کا اظہار کیا۔

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق نواز الدین صدیقی ان دنوں ریاست اترپردیش میں واقع  اپنے آبائی گاؤں بدھانا میں ہیں اور وہ خود کو مصروف رکھنے کے لیے کاشت کاری کررہے ہیں۔

یاد رہے کہ اس سے قبل تقریباً چار برس پہلے نواز الدین صدیقی نے بھارتی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا تھا کہ وہ خود کسان رہ چکے ہیں اس لیے اُن کو درپیش مسائل سے بخوبی واقف ہیں۔

این ڈی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق نواز الدین صدیقی نے بہت چھوٹی عمر سے کاشت کاری شروع کر دی تھی، ان کے والد نواب الدین صدیقی خود بھی ایک کسان تھے، انہوں نے اپنے صاحبزادے پر زور دیا کہ وہ تعلیم حاصل کریں اور کھیتی باڑی کے کام سے دور رہیں۔

fb-share-icon0

Tweet
20

Comments

comments



سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
loading...

Related Articles