سعودی اسکولوں میں کرونا وائرس کی ایس او پیز کیا ہیں؟ –


ریاض: سعودی عرب میں اسکولوں کے لیے کرونا وائرس سے بچاؤ کی ایس او پیز جاری کردی گئیں، قومی مرکز نے بچاؤ کی 6 اہم تدابیر مقرر کی ہیں۔

سعودی ویب سائٹ کے مطابق سعودی عرب میں متعدی امراض سے بچاؤ اور انسداد کے قومی مرکز وقایۃ نے اسکولوں میں کرونا وائرس سے بچاؤ کی تدابیر جاری کی ہیں، طلبہ و طالبات، اساتذہ اور انتظامی عملے پر حفاظتی تدابیر کی پابندی لازمی ہوگی۔

متعدی امراض سے بچاؤ کے قومی مرکز نے بچاؤ کی 6 اہم تدابیر مقرر کی ہیں۔

ان تدابیر کے مطابق طلبہ اور عملے کو کرونا وائرس سے متعلق آگاہی دی جائے، اس سے بچاؤ کے طریقے بتائے جائیں۔ اسکولوں کے ہیلتھ گائیڈز کو آگاہی لٹریچر مہیا کیا جائے۔

تمام اسکولوں میں صابن اور ہاتھ صاف کرنے والے لوشن فراہم کیے جائیں، واش روم میں ہاتھ دھونے کے لیے صابن کا بندوبست کیا جائے۔

وزارت صحت کے مقرر کردہ سینی ٹائزر سے اسکول کی تمام کرسیوں، بینچوں اور ڈیسکوں وغیرہ کی مسلسل صفائی کا اہتمام کیا جائے۔ اسکولوں میں پبلک مقامات کو سینی ٹائز کیا جائے۔

طلبہ کے زیر استعمال واش رومز مسلسل صاف کیے جائیں، ایسے تمام مقامات کو خاص طور پر زیادہ اہتمام سے سینی ٹائز کیا جائے جو طلبہ اور عملے کے استعمال میں زیادہ رہتے ہوں مثلاً دروازوں کے ہینڈل، ڈائننگ ٹیبلز، نشستوں کے دستے اور لفٹس کے بٹن وغیرہ۔

اسکولوں میں صاف ستھری ہوا کی فراہمی اور خراب ہوا کی نکاسی کا انتظام ہو۔

جن طلبہ کے حوالے سے کرونا وائرس میں مبتلا ہونے کا شبہ ہوجائے انہیں پہلی فرصت میں ہیلتھ سینٹر بھیج دیا جائے، اسکول ہیلتھ گائیڈ روزانہ کی بنیاد پر طلبہ کا معائنہ کرے، شفا یاب ہونے تک طالب علم کی اسکول حاضری پر پابندی لگائی جائے۔

کسی طالب علم کے کرونا وائرس میں مبتلا ہونے کا یقین ہوجائے تو اسے سکول آنے سے روک دیا جائے اور فٹنس سرٹیفیکیٹ کے بغیر اسکول واپسی پر پابندی لگا دی جائے۔

ایسے طلبہ، اساتذہ اور عام عملے پر کڑی نظر رکھی جائے جو کرونا وائرس کے مصدقہ مریضوں سے مل چکے ہوں، اس سلسلے میں اسکول اور ہیلتھ سینٹر ایک دوسرے کی مدد کریں۔ ایسے کسی بھی طالب علم، استاد یا کارکن کے اسکول آنے پر پابندی لگا دی جائے جو کرونا وائرس کے مریض سے مل چکا ہو۔

fb-share-icon0

Tweet
20

Comments

comments



سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
loading...

Related Articles