پولیو ورکرز ایس او پیز کے ساتھ گھر گھر پہنچنے لگے –


کراچی: ملک کے مخصوص اضلاع میں انسداد پولیو مہم تیسرے روز بھی جاری ہے، پولیو ورکرز مکمل ایس او پیز کے ساتھ گھر گھر جا رہے ہیں، اس موقع پر سیکورٹی کے بھی سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق آج ملک کے مخصوص اضلاع میں انسداد پولیو مہم کا تیسرا روز ہے، بچوں کو پلائے جانے والے پولیو کے دو بوند نہ صرف اپنے بچوں کی خاطر، اپنے گھر کی خاطر ہیں بلکہ یہ پاکستان کی خاطر ہیں۔

بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کے لیے تربیت یافتہ رضا کار ایس او پیز کے ساتھ گھر گھر جا رہے ہیں، کراچی میں بلدیہ، اورنگی، نارتھ نآظم آباد اور لیاقت آباد میں 2 لاکھ 60 ہزار بچوں کو انسداد پولیو کے قطرے پلائیں جا رہے ہیں۔

لاہور کی 6 یونین کونسلز میں اب تک (دو روز میں) 28 ہزار سے زائد بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے گئے ہیں، فیصل آباد میں ایک لاکھ 53 ہزار اور اٹک میں 35 ہزار سے زائد بچوں کو پولیو سے بچاؤ کے قطرے پلائے گئے، باقی بچوں کو آج اور آنے والے دنوں میں قطرے پلائے جائیں گے، ڈی ڈی ایچ او راوی ٹاؤن کے مطابق لاہور میں آج 27 ہزار بچوں کو پولیو کے قطرے پلانے کا ٹاسک ہے۔

پنجاب کے 3 اضلاع میں انسداد پولیو مہم کا دوسرا روز

کوئٹہ کی 10 یونین کونسلز میں ایک لاکھ 10 ہزار سے زائد بچوں کو انسداد پولیو کی دو بوندیں پلانے کا ہدف ہے، جنوبی وزیرستان کے علاقے وانا، انگوراڈا سمیت مختلف علاقوں میں بھی انسداد پولیو مہم جاری ہے، پولیو ٹیموں کی سیکورٹی کے لیے سخت اقدامات کیے گئے ہیں۔

واضح رہے کہ کرونا کے پیش نظر انسداد پولیو ورکرز ہینڈ سینی ٹائزر کا استعمال کر رہے ہیں، فیلڈ میں جانے سے قبل ورکرز کی اسکریننگ بھی کی گئی ہے۔ یاد رہے کہ پنجاب میں پولیو مہم کے حوالے سے وزیر اعلیٰ عثمان بزدار نے اہم بیان دیتے ہوئے کہا تھا کہ اگر کسی علاقے میں پولیس کیس نکلا تو متعلقہ سی ای او ہیلتھ کے خلاف ایکشن لیا جائے گا اور ڈپٹی کمشنر سے پوچھ گچھ کی جائے گی۔

fb-share-icon0

Tweet
20

Comments

comments



سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
loading...

Related Articles